کھانے کے بعد وہ خطرناک کام جو ہم کرتے ہیں

کھانے کے بعد وہ خطرناک کام جو ہم کرتے ہیں فائل فوٹو

کھانا کھانے کے فوراً بعد اکثر پانی یا چائے پینے کی طلب ہوتی ہے کچھ افراد سو بھی جاتے ہیں لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ یہ تمام عادتیں صحت کے لیے کتنی خطرناک ہیں؟ ماہرینِ صحت کا کہنا ہے کہ اچھی صحت کے لیے لازم ہے کہ کھانا کھانے کے فوراً بعد مندرجہ ذیل بیان کی گئیں ان عادات کو ترک کردیا جائے۔

پھلوں کا استعمال ہماری صحت کے لیے بہت اچھا ہے لیکن اگر آپ چاہتے ہیں کہ پھلوں کی بھر پور غذائیت حاصل کریں تو اس کے لیے ضروری ہے کہ ہم اس کو صحیح وقت پر کھائیں کیونکہ کھانے کے فوری بعد پھلوں کا استعمال نظامِ ہاضمہ کو متاثر کرتا ہے، ساتھ ہی یہ زبان کے ذائقے کو بھی خراب کرتا ہے۔

کھانا کھانے کے بعد فوراً لیٹنے سے کھانا درست طریقے سے ہضم نہیں ہوپاتا جس کے باعث پیٹ درد اور معدے کے مسائل کی شکایات پیدا ہوتی ہیں۔ اسی طرح ماہرین صحت کھانے کے فوری بعد نہانے سے گریز کرنے کا مشورہ بھی دیتے ہیں۔

تمباکو کا استعمال اور سگریٹ نوشی صحت کے لیے مضر ہے لیکن اس کے باوجود بھی کچھ لوگ کھانے کے فوری بعد سگریٹ پینے کی عادی ہوتے ہیں۔ تحقیق کے مطابق کھانے کے بعد ایک سگریٹ پینا تقریباً 10 سگریٹ پینے کے برابر نقصان پہنچاتا ہے۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ سگریٹ اور تمباکو نوشی معدے کے لیے نقصان دہ ہے اور یہ آنتوں کے لیے پریشانی کا باعث بنتی ہے۔ اس کے علاوہ اس سے (آئی بی ایس) اور باؤل انفیکشن کا خدشہ ہوتا ہے۔

اگر کھانا کھانے کے بعد بیلٹ ڈھیلی کرنی پڑ جائے تو اس کا مطلب یہ ہے کہ آپ نے ضرورت سے زیادہ کھانا کھالیا ہے جو نقصان دہ ہے۔ تحقیق کے مطابق معدے پر ہلکا دباؤ پیٹ اور نظامِ ہاضمہ کو متاثر کرسکتا ہے۔

پانی جتنا زیادہ پیا جائے اتنا ہی صحت کے لیے بہتر ہوتا ہے لیکن کھانے کے فوری بعد پانی پینا صحت کو نقصان بھی پہنچا سکتا ہے۔

کھانے کے فوری بعد پانی پینے سے آپ کے جسم میں گیسٹرک جوس اور انزائمز کی مقدار کم ہو جاتی ہے جس سے تیزابیت میں مزید اضافہ ہو جاتا ہے۔ اسی طرح کھانے کے فوری بعد کافی اور چائے کا استعمال آئرن کو ہضم کرنے میں دشواری پیدا کرتا ہے۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store