وزیراعظم کا دورہ ثمرقند، امیدیں اور توقعات

ازبکستان کا شہر ثمرقند اپنے اندر سات سو سال قبل مسیح سے تاریخ کی اونچ نیچ کو سموئے ہوئے ہے، بادشاہ افراسیاب سے لیکر ازبکستان کے موجودہ صدر شوکت میر ضیایف تک کبھی فاتحین کی گذرگاہ اور کبھی اولیا اللہ کی آرامگاہ ثمرقند آج بھی اپنے مہمانوں کے لئے تاریخ کے جھروکے کھولے میزبانی کے لئے مستعد رہتا ہے۔

غیر معمولی آسانیوں کا نقصان

جدت یقینا لازم ہے اور انسان کا سفر بھی ایسا ہی ہے وقت کے ساتھ ساتھ اپنی آسانی کے لیے انسان جو ایجاد کر سکتا تھا اس نے کیا۔پہلے علم کے حصول کے لیے میلوں کا سفر کر کے جایا جاتا تھا یہ وہ وقت تھا جب اہل علم کا بڑا مقام تھا۔ جب جستجو تھی پڑھنے کی،لکھنے کی۔ ایجادات کی دنیا نے میلوں کوسفر لمحوں میں بدل ڈالا۔ پھیلی دنیا کو انسان کی ہتھیلی پر اسمارٹ فون کی صورت میں لا کر رکھ دیا گیا۔ پھر کیا ہوا؟غیر معمولی آسانیاں پیدا ہوگئیں معلومات کے حصول کو ہی علم سمجھ لیا گیا،بہترین پوسٹ پڑھ کر یا لکھ سمجھا جانے لگا کہ یہی علم ہے مگر حقیقت بر عکس ہے صاحب!

ایک صحت مند معاشرے کیلئے انسان پر عائد ذمہ داریاں اور ان کا درست تعین

انسان فطری طور پہ اجتماعیت پسند ہے وہ ہر سطح پر مل جل کر زندگی بسر کرنا اس کی شخصیت میں شامل ہے جس کے نتیجے میں خاندان، قبائل اور اقوام وجود میں آئی ہیں، مل جل کر اجتماعی زندگی گزارنے اور معاشرے کی ترقی کے لیے آپس میں باہمی تعاون اور ذمہ داری نبھانا بھی انسان کی فطرت میں شامل ہے۔

یوکرین مظلوم ہے؟

عالمی منظر نامے میں باالخصوص جب سے وزیر اعظم عمران خان دورہ روس کر کے آئیں ہیں، تب ہی سے روس اور یوکرین کا موضوع ہمارے ملک کا اہم ترین بن گیا ہے۔

Subscribe to this RSS feed