اوکاڑہ میں شادی میں شرکت کے لیے میکے آئی خاتون کے ساتھ زیادتی

اوکاڑہ میں شادی میں شرکت کے لیے میکے آئی خاتون کے ساتھ زیادتی فائل فوٹو

اوکاڑہ میں ایک اور خاتون کے ساتھ زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ شیخوپورہ سے اوکاڑہ میکے آئی خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

تھانہ صدر میں درج مقدمہ کے مطابق خاتون شیخوپورہ سے شادی میں شرکت کے لیے والدین کے گھر آئی۔

خاتون کے ساتھ زیادتی اس وقت ہوئی جب رات کے وقت وہ والدین کے گھر سو رہی تھی۔شبیر نامی ملزم نے اسلحہ کے زور پر زبردستی زیادتی کا نشانہ بنایا اور موبائل فون سے ویڈیو بھی بنا لی۔ملزم خاتون کو 8 روز تک بیک میل کرتے ہوئے زیادتی کا نشانہ بناتا رہا۔ملزم اور اس کا ساتھی شہزاد سنگین دھمیاں دیتے رہے۔حمل کے خدشے پر گولیاں کھلا دیں جس سے خاتون کی حالت غیر ہو گئی۔

اس حوالے سے ایس ایچ او حافظ احسن کا کہنا ہے وقوعہ ایک ماہ پرانا ہے۔ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

ملزمان کو گرفتار کر کے قانون کے مطابق کاروائی کی جائے گی۔دوسری جانب شیخوپورہ میں چار افراد نے گھر میں گھس کر 16 برس کی لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ لاہور کے علاقے نشتر کالونی میں 20 سال کی لڑکی کو تشددکے بعد قتل کر دیا گیا،

مقتولہ کے بھائی کو حراست میں لیکر تفتیش شروع کر دی گئی،مظفر گڑھ میں بھی 13 برس کے لڑکے کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

مقدمہ درج کرانے پر ملزموں نے بچے ہی کو اغوا کر لیا، والدین نے متعلقہ حکام سے بیٹے کو بازیاب کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید برآں بتایا گیا ہے کہ تھانہ ویسٹریج پولیس نی13 سالہ بچے سے زیادتی کرنے والا ملزم گرفتارکر لیا متاثرہ بچے کے ماموں شاہ نواز نے تھانہ ویسٹریج پولیس کودرخواست دی کہ اس کا بھانجا حفظ کرنے کے لئے مسجد جاتا ہے، جس کو شیر شاہ نے اپنے گھر لے جا کر زیادتی کا نشانہ بنایا، جس پرپولیس نے مقدمہ درج کر کے گزشتہ روز شیر شاہ کو گرفتار کر لیا۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store