کشمیر میں موسلادھار بارش، مکان گرنے سے 10افراد جاں بحق

آزاد جموں و کشمیر میں بارش کے نتیجے میں ایک کچا مکان کے گرنے سے 10 افراد جاں بحق ہو گئے فائل فوٹو آزاد جموں و کشمیر میں بارش کے نتیجے میں ایک کچا مکان کے گرنے سے 10 افراد جاں بحق ہو گئے

آزاد جموں و کشمیر میں بارش کے نتیجے میں ایک کچا مکان کے گرنے سے 10 افراد جاں بحق جبکہ چار زخمی ہو گئے۔

ہجیرہ کے اسسٹنٹ کمشنر ولید انور نے بتایا کہ یہ واقعہ اتوار کی رات کو دریائے پونچھ کے بائیں کنارے پر ضلع پونچھ کے آخری گاؤں تاہی کھکھریالی میں پیش آیا۔

ولید انور نے کہا کہ گزشتہ چند دنوں سے ہونے والی بارشوں نے مکان کی چھت بالخصوص برآمدے کے اوپر کا حصہ نازک اور کمزور بنا دیا تھا، کچے مکان میں دو بھائی اور ان کے متعلقہ خاندان رہتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ دونوں خاندانوں کے 14 افراد میں زیادہ تر بچے تھے جو حادثے کے وقت برآمدے میں سو رہے تھے اور چھت گرنے سے وہ مٹی کے ٹیلوں کے نیچے دب گئے۔

اسسٹنٹ کمشنر نے بتایا کہ گاؤں کے لوگ جائے وقوع پر جمع ہوئے اور ملبے سے سات لاشیں اور اتنے ہی زخمیوں کو نکالا لیکن اچانک بارش نے ان کی کوششوں میں رکاوٹ ڈالی۔

انہوں نے مزید کہا کہ زندہ بچ جانے والوں کو تتہ پانی کے ایک نجی اسپتال لے جایا گیا جہاں ان میں سے تین زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے۔

جاں بحق ہونے والوں کی شناخت 60 سالہ سیدی بیگم، 36 سالہ نورین بیگم، 13 سالہ سحر، 11 سالہ نبیہ، 35 سالہ وقار بیگم، 13 سالہ زویا، 11 سالہ ادیشہ، آٹھ سالہ اسناد، چھ سالہ زماد اور پانچ سالہ مبشر کے نام سے ہوئی۔

زندہ بچ جانے والوں میں 20 سالہ زونیر احمد، 18 سالہ فریال، چھ سالہ انیسہ اور دو سالہ زوہان شامل ہیں۔

ایک بیان میں آزاد جموں و کشمیر کے وزیراعظم سردار تنویر الیاس نے جانوں کے ضیاع پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا اور متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ جاں بحق افراد کی تدفین اور زخمیوں کے علاج میں متاثرہ خاندانوں کو سہولت فراہم کریں۔

انہوں نے ایک بار پھر لوگوں بالخصوص آزاد جموں و کشمیر کا دورہ کرنے والوں پر زور دیا کہ وہ سخت موسم کے درمیان انتہائی احتیاط برتیں۔

ملک کے دیگر حصوں کی طرح آزاد جموں و کشمیر بھی شدید بارشوں کی لپیٹ میں ہے جس سے ندی نالے ابل پڑے ہیں اور مٹی کے تودے گرنے کے نتیجے میں ٹریفک میں رکاوٹ اور خلل پڑتا ہے۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store