سابق امریکی صدور کیمرے کے سامنے ازخود کرونا ویکسین کی خوراک لینے پہ تیار

سابق امریکی صدور فائل فوٹو سابق امریکی صدور

عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے منظر عام پر آنے والی کورونا ویکسین پرعام افراد کا اعتماد قائم کرنے کے لیے امریکہ کے سابق صدور نے اعلان کیا ہے کہ وہ پہلے مرحلے میں ازخود ویکسین کی خوراک لیں گے۔

امریکی ذرائع ابلاغ نے مؤقر نشریاتی ادارے سی این این کے حوالے سے بتایا ہے کہ یہ اعلان سابق امریکی صدور بارک اوبامہ، جارج ڈبلیو بش اور بل کلنٹن کی جانب سے کیا گیا ہے۔

امریکہ کے سابق صدور کی جانب سے یہ اعلان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے کہ جب 40 فیصد امریکیوں میں ویکسین کے حوالے سے خوف پایا جاتا ہے اور وہ اس کی خوراک لینے سے انکار کرچکے ہیں۔

نومبر 2020 میں کیے جانے والے گیلپ پول میں کہا گیا تھا کہ بیشک! امریکیوں میں ویکسین کے حوالے سے خوف کم ہوا ہے لیکن اب بھی 40 فیصد بالغ امریکیوں کا کہنا ہے کہ وہ ویکسین کی خوراک نہیں لیں گے۔

عالمی ذرائع ابلاغ کے مطابق ماہ رواں کے وسط تک امریکہ میں کورونا ویکسین پہنچ جائے گی۔ امریکہ میں شہریوں کو دی جانے والی تیار ویکسین فائزر اور ماڈرنا کی تیار کردہ ہو گی۔

سابق صدر بارک اوبامہ کا کہنا ہے کہ انہیں متعدی امراض کے ماہر ڈاکٹر فاؤسی پر مکمل اعتماد ہے۔ انہوں نے سیرئس ایکس ایم ریڈیو کو ایک انٹرویو میں کہا کہ اگر ڈاکٹر فاؤسی کہتے ہیں کہ ویکسین بالکل محفوظ ہے تو وہ اس کی خوراک لینے میں قطعی ہچکچاہٹ محسوس نہیں کریں گے۔

سابق امریکی صدر بارک اوبامہ نے کہا کہ وہ جب ویکسین کی خوراک لیں گے تو اسے ٹی وی پر نشر کیا جا سکتا ہے اور یا پھر فلم بھی بنائی جا سکتی ہے تاکہ لوگوں کو معلوم ہو کہ مجھے میڈیکل سائنس پر مکمل اعتماد ہے۔

امریکہ کے مؤقر نشریاتی ادارے سی این این کو سابق صدر جارج ڈبلیو بش کے چیف آف اسٹاف فریڈی فورڈ نے بتایا کہ سابق صدر نے خود ڈاکٹر فاؤسی اور وائٹ ہاؤس کی کووڈ 19 ٹیم سے استفسار کیا تھا کہ وہ ویکسین کے حوالے عوام میں آگاہی پھیلانے کے لیے کس طرح معاون و مددگار ثابت ہو سکتے ہیں؟

فریڈی فورڈ نے نشریاتی ادارے کو بتایا کہ سب سے پہلے ویکسین کو محفوظ تصور کیا جانا چاہیے اور ان لوگوں کو ترجیح کی بنیاد پر ویکسینیشن کی جانی چاہئے جن کو دیگر کی نسبت زیادہ ضرورت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سابق صدر بش خوشی کے ساتھ کیمرے کے سامنے ویکسین کی خوراک لیں گے۔

امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق سابق صدر بل کلنٹن کے ترجمان اینجل اوکا کا کہنا ہے کہ سابق صدر ویکسین کے دستیاب ہوتے ہی پبلک ہیلتھ افسر کے سامنے ترجیحات کی بنیاد پر ویکسینیشن کرائیں گے۔

اینجل اوکا نے کہا کہ اگر امریکی شہریوں میں اس طرح اعتماد پیدا ہوتا ہے تو وہ عوام کے سامنے بھی خوراک لینے کو تیار ہیں۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store