Fri 20 April 2018

ایران کی سعودی عرب سے تعلقات کی بحالی پر مشروط آمادگی

ایران کی سعودی عرب سے تعلقات کی بحالی پر مشروط آمادگی ایران کی سعودی عرب سے تعلقات کی بحالی پر مشروط آمادگی

ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ ہم سعودی عرب سے بہتر تعلقات کے خواہاں ہیں تاہم اس کے لیے سعودی عرب کو اسرائیل سے تعلقات ختم اور یمن پر بمباری بند کرنی ہوگی۔

غیرملکی خبررساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق ایرانی صدر حسن روحانی کا پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہم سعودی عرب سے بہتر تعلقات کے خواہاں ہیں مگر اس کے لیے سعودی حکومت کو دو چیزوں کو ترک کرنا ہوگا اول اسرائیل کے ساتھ گمراہ کن دوستی اور دوم یمن پر غیر انسانی بمباری، اگر یہ دونوں وجوہات ختم ہوجائیں تو ایران اور سعودی عرب کے تعلقات بحال ہوجائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم امریکا کی طرح نہیں جس نے وعدہ خلافی کرتے ہوئے جوہری معاہدے کو توڑ دیا، ہم جب کوئی معاہدہ کرتے ہیں تو اسے پورا کرتے ہیں۔

امریکا کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے معاملے پر ایرانی صدر نے کہا کہ بیت المقدس اور فلسطینی قوم کی مدد کے لیے ایران ہرممکن قدم اٹھائے گا کیوں کہ بیت المقدس مسلمانوں کی سرزمین ہے۔

واضح رہے کہ گذشتہ سال جنوری میں تہران میں سعودی سفارت خانے پر حملے کے بعد سعودی عرب نے ایران سے سفارتی تعلقات منقطع کرلیے تھے۔