یورپی یونین نے افغانستان کیلئے ایک ارب یورو کے امدادی پیکج کا اعلان کر دیا

یورپیئن کمیشن کی سربراہ ارسولا وان ڈیر لیین فائل فوٹو یورپیئن کمیشن کی سربراہ ارسولا وان ڈیر لیین

یورپی یونین نے افغانستان کو بڑے انسانی، سماجی اور معاشی بحران سے بچانے کے لیے ایک ارب یورو کے امدادی پیکج کا اعلان کردیا ہے۔

خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق یورپی یونین نے ایک بیان میں کہا کہ افغانستان کی انسانی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے پہلے سے اعلان کردہ 25کروڑ یوروز کی رقم میں مزید 30کروڑ یوروز کا اضافہ کیا جائے گا جبکہ باقی رقم افغانستان کے ان پڑوسی ممالک کو دی جائے گی جہاں لوگ طالبان حخومت سے فرار کے بعد بطور مہاجرین جا رہے ہیں۔

یورپیئن کمیشن کی سربراہ ارسولا وان ڈیر لیین نے اٹلی کی میزبانی میں ورچوئل جی20 سمٹ کے دوران امداد کا اعلان کیا جہاں یہ سمٹ میں افغانستان میں انسانی اور سیکیورٹی کی صورت حال پر بات چیت کے لیے طلب کیا گیا تھا۔

انہوں نے زور دیا کہ یورپی یونین کے فنڈز افغانوں کے لیے براہ راست مدد ہیں اور یہ فنڈز طالبان حکومت کے بجائے زمین پر کام کرنے والی بین الاقوامی تنظیموں کو بھیجے جائیں گے کیونکہ یورپی یونین طالبان حکومت کو تسلیم نہیں کرتی۔

دریں اثنا انسانی امداد سے قطع یورپی یونین کی ترقیاتی امداد بدستور منجمد ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں افغانستان کو انسانی اور سماجی و معاشی تباہی سے بچانے کے لیے ہر ممکن کوشش کرنی چاہیے اور مسم سرما کی آمد کے پیش نظر ہمیں یہ کام تیزی سے کرنے کی ضرورت ہے۔

یورپی کمیشن کی سربراہ نے کہا کہ ہم افغان حکام کے ساتھ کسی بھی قسم کے مذاکرات کے لیے انسانی حقوق کے احترام سمیت ہم شرائط واضح کر چکے ہیں لیکن افغان عوام کو طالبان کے رویے اور اقدامات کی سزا نہیں ملنی چاہیے۔

یورپی یونین کے ممالک کو خدشہ ہے کہ افغان پناہ گزیں افغانستان کی حالیہ صورتحال میں ان کے ملک میں داخلے کی کوشش کرسکتے ہیں جیسا 2015 میں شام سے فرار ہونے والے مہاجرین نے بڑی تعداد میں ئیورپی ممالک کا رخ کیا تھا۔

یورپی یونین کا ماننا ہے کہ طالبان کے زیر اقتدار افغانستان کو مستحکم اور افغانستان اور یورپ کے درمیان ممالک کی مدد سے مہاجرین کی آمد کے بہاؤ کو روکا جا سکتا ہے۔

وان ڈیر لیین نے کہا ہے کہ یورپی یونین کے ممالک خصوصاً شمالی بحر اوقیانوس معاہدہ تنظیم کے مشن کے معاہدے میں شریک ممالک کی اخلاقی ذمے داری بنتی ہے کہ وہ افغانیوں کی مدد کریں۔

یورپی یونین کے اعلان کردہ اس ایک ارب یورو کے امدادی پیکیج سے افغانستان میں صحت کے شعبے کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی جبکہ اس سے افغانستان کے پڑوسی ممالک کو دہشت گردی، جرائم اور تارکین وطن کی اسمگلنگ روکنے میں مدد ملے گی۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store