لاہور ہائی کورٹ نے بابراعظم کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا سیشن کورٹ کا حکم معطل کردیا

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم فائل فوٹو قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم

لاہور ہائی کورٹ نے قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا سیشن کورٹ کا حکم معطل کر دیا ہے اور متعلقہ ایس ایچ او اور حامیزہ مختار کو8 فروری کیلئے نوٹس جاری کر دیئے ہیں۔

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس اسجد جاوید گھرال نے بابر اعظم کی درخواست پر سماعت کی جس میں اندراج مقدمے کی درخواست پر ماتحت عدالت کے احکامات کو چیلنج کیا گیا۔

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان کے وکیل حارث عظمت ایڈووکیٹ نے نشاندہی کی کہ سیشن عدالت نے حقائق کے برعکس بابر اعظم کیخلاف اندراج مقدمہ کا حکم دیا ہے۔ وکیل کے مطابق حامیزہ مختار نے بابر اعظم کو بلیک میل کرنے کیلئے بے بنیاد درخواست دائر کی۔

وکیل کے بقول خاتون نے 2018 میں ہی بابر اعظم سے صلح کی تھی اور معاملہ ختم ہو گیا تھا۔ وکیل نے بتایا کہ پولیس نے بھی حامیزہ مختار دھمکی آمیز کالز موصول ہونے کے معاملے پر منفی رپورٹ پیش کی اور سیشن عدالت نے شواہد کے بغیر بابر اعظم کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا۔

وکیل نے استدعا کی کہ بابر اعظم کیخلاف اندراج مقدمہ کے حکم پر عملدرآمد روکا جائے اور قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان کیخلاف اندراج مقدمہ کی کارروائی غیر قانونی قرار دے کر کالعدم کی جائے۔ درخواست پر مزید سماعت 8 فروری کو ہو گی۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store