کراچی این اے 249 ضمنی الیکشن، ن لیگ اور پی پی میں کانٹے کا مقابلہ

این اے 249، ضمنی الیکشن کیلئے پولنگ کا وقت مکمل ووٹوں کی گنتی جاری فائل فوٹو این اے 249، ضمنی الیکشن کیلئے پولنگ کا وقت مکمل ووٹوں کی گنتی جاری

این اے 249کراچی میں ضمنی انتخاب کیلئے پولنگ ہوئی جس کے بعد غیر حتمی و غیر سرکاری نتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے۔

این اے 249 ضمنی الیکشن کے غیرحتمی اورغیرسرکاری نتائج کے مطابق 276 پولنگ اسٹیشنز میں سے 98 کے نتائج موصول ہوچکے ہیں۔

پیپلزپارٹی کےقادرخان مندوخیل 5601 ووٹ لے کر پہلے نمبر پر ہیں جبکہ ن لیگ کے مفتاح اسماعیل 5155 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر ہیں۔

ٹی ایل پی کے نذیر احمد 4603 ووٹ لے کر تیسرے، پی ٹی آئی کے امجد آفریدی 3173 ووٹ لے کر چوتھے، پی ایس پی کے مصطفی کمال 3165 ووٹ لے کر پانچویں اور ایم کیوایم کے حافظ محمد مرسلین 2636 ووٹ لے کر چھٹے نمبر پر ہیں۔

این اے 249 پر تحریک انصاف کے امجد اقبال آفریدی ، مسلم لیگ ن کے مفتاح اسماعیل ، پیپلز پارٹی کے قادر خان مندوخیل، پاک سرزمین پارٹی کے مصطفیٰ کمال، ایم کیو ایم پاکستان کے حافظ محمد مرسلین سمیت 30 امیدوار میدان میں ہیں۔

یہ نشست پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی فیصل واوڈا کے مستعفی ہونے کے بعد خالی ہوئی تھی۔

پولنگ کے دوران حلقے میں کچھ مقامات پرانتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی دیکھنے میں آئی۔ایک پولنگ اسٹیشن پر پریزائڈنگ آفیسر نے دو بجے ہی فارم 45 پر پولنگ ایجنٹس سے دستخط کرالیے۔

پی ایس پی کے رہنما حسان صابر کے مطالبے پردستخط شدہ فارم 45 منسوخ کردیے گئے۔ الیکشن کمیشن نے دوران پولنگ پی ٹی آئی کے 6 ارکان اسمبلی فردوس شمیم نقوی، راجا اظہر، سعید آفریدی، ملک شہزاد اعوان، بلال غفار ،شاہ نواز جدون اورن لیگ کے کھیل داس کوہستانی کو حلقے سے نکل جانے کا حکم دیا۔

این اے 249 میں ضمنی انتخاب کے لیے پولنگ کا وقت صبح 8 بجے شروع ہوا جو بغیر کسی وقفے کے شام 5 بجے تک جاری رہا۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store