آئی جی کی تعیناتی؛ وزیر اعلیٰ سندھ کا وزیر اعظم کے سامنے دوٹوک موقف۔۔۔عمران خان پریشان

وزیر اعلیٰ سندھ اور وزیر اعظم عمران فائل فوٹو وزیر اعلیٰ سندھ اور وزیر اعظم عمران

سندھ حکومت آئی جی کی تعیناتی کے معاملے پر اَڑ گئی اور مزید نام دینے سے انکار کردیا، وزیر اعلیٰ سندھ نے وزیر اعظم سے کہا ہے کہ ہم جو نام دے چکے ہیں انہی میں سے آئی جی تعینات کیا جائے۔

سندھ میں آئی جی پولیس کی تبدیلی کے معاملے پر وزیر اعظم عمران خان اور وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کے درمیان ٹیلی فونک رابطہ ہوا۔

باوثوق ذرائع کے مطابق وزیر اعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں آئی جی سندھ کی تبدیلی سے متعلق ہونے والی گفتگو کے بارے میں وزیر اعلیٰ سندھ کو بتایا جس پر وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے وزیراعظم کے سامنے دو ٹوک موقف اپناتے ہوئے کہا کہ آئی جی پولیس کے عہدے کے لیے ہم جو نام دے چکے ہیں انہی میں سے کسی کو ایک افسر تعینات کیا جائے، ہم نام دے چکے اب کوئی اور نام نہیں دیں گے۔

دریں اثناء سندھ حکومت کے ذرائع کا کہنا ہے وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ نے سابق صدر آصف علی زرداری سے بھی نجی اسپتال میں گزشتہ روز ملاقات کی اور اس ملاقات میں وزیر اعلیٰ نے سابق صدر کو وزیر اعظم سے ہونے والی گفتگو سے متعلق آگاہ کیا اور سندھ حکومت کی جانب سے کیے جانے والے اقدامات سے سابق صدر کو آگاہ کیا۔

مزید پڑھیں:  وزیر اعظم عمران خان سے آئی جی سندھ کی ملاقات؛ کلیم امام کواہم ذمداری دینے کا فیصلہ

ذرائع کا کہنا ہے کہ مراد علی شاہ نے آصف زرداری کو آئی جی سندھ کی تبدیلی سے متعلق بھی آگاہی دی جس پر سابق صدر نے معاملہ آئین و قانون کے تحت حل کرنے پر زور دیا۔

قبل ازیں وزیراعلیٰ ہاؤس میں سندھ کابینہ کے اہم وزراء کا ایک غیر رسمی اجلاس وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کی صدارت میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں وزیر اطلاعات و محنت سعید غنی، مشیر قانون بیرسٹر مرتضی وہاب، امتیاز احمد شیخ اور اسماعیل راہو سمیت دیگر شریک ہوئے۔

صوبائی کابینہ کے ذرائع کے مطابق مراد علی شاہ نے وزیر اعظم سے ہونے والی ملاقات اور ٹیلی فون پر ہونے والی گفتگو سے متعلق صوبائی وزراء کو اعتماد میں لیا۔

یہ بھی جانئیے: آئی جی سندھ کے تبادلے کی منظوری مؤخر، اہم وجہ نے معاملہ مزید الجھا دیا ...

اس موقع پر وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان آئی جی سندھ پولیس کی تعیناتی سے متعلق یقین دہانی کرا چکے ہیں، مجھے بتایا گیا تھا کہ منگل کو نئے آئی جی کا نوٹی فکیشن جاری ہو جائے گا تاہم حیرت انگیز طور پر نئے آئی جی پولیس کی تقرری کا حکم نامہ جاری نہیں کیا گیا

ذرائع کے مطابق سندھ کے وزراء نے بھی وزیر اعظم کی یقین دہانی کے باوجود تعیناتی نہ کیے جانے پر سخت تشویش اور غصے کا اظہار کیا اور وزیراعلیٰ پر زور دیا کہ وفاق کے سامنے اس ضمن میں دو ٹوک موقف اپنایا جائے جس پر وزیراعلیٰ نے کہا کہ حیرت ہے وزیر اعظم کی یقین دہانی بھی پوری نہیں ہوئی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ نے شرکاء کو بتایا کہ وزیراعظم عمران خان اور ان کے درمیان اس معاملے پر پانچ مرتبہ ٹیلی فون پر رابطے ہوچکے ہیں جبکہ دو ملاقاتیں ہوئی ہیں جن میں انہیں یقین دہانی کرائی۔

یہ خبر بھی پڑھیں: وزیراعظم سے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی ملاقات, آئی جی کے حوالے سے بڑا فیصلہ ...

اجلاس میں بعض صوبائی وزراء نے کہا کہ دیگر صوبوں میں آئی جی پولیس کو ہٹانے، نئی تعنیاتی کے لیے یہ طریقہ کار کیوں اختیار نہیں کیا گیا؟ ذرائع کے مطابق کابینہ ارکان نے کہا کہ انتظامی فیصلے کو سیاسی بنانے کی کوشش کی جارہی ہے اور وفاقی حکومت کے ساتھ معاملات کو خراب کرنے کے لیے بعض عناصر بھی سرگرم ہیں۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store