Tue 20 February 2018

مقتول انتظار کے والد نے ایس ایس پی مقدس حیدر کو بیٹے کا قاتل قرار دے دیا

مقتول انتظار کے والد نے ایس ایس پی مقدس حیدر کو بیٹے کا قاتل قرار دے دیا فائل فوٹو مقتول انتظار کے والد نے ایس ایس پی مقدس حیدر کو بیٹے کا قاتل قرار دے دیا

کراچی کے علاقے ڈیفنس میں قتل ہونے والے نوجوان انتظار احمد کے والد نے ایس ایس پی مقدس حیدر کو براہ راست بیٹے کا قاتل قرار دے دیا۔

19 سالہ انتظار احمد کے والد اشتیاق احمد نے کہا کہ بیٹے کے ساتھ کار میں موجود لڑکی مدیحہ کیانی اور سلمان بھی قتل میں ملوث ہے، جس طرح تفتیش ہورہی ہے اس سے انصاف کی امید نہیں۔

کراچی کے علاقے ڈیفنس میں گزشتہ دنوں پیش آنے والے فائرنگ کے واقعے میں ہلاک ہونے والے نوجوان انتظار احمد کے والد نے مطالبہ کیا ہے کہ واقعے کی سی سی ٹی وی وڈیو منظرعام پر لائی جائے۔

19 سالہ انتظار احمد کے والد اشتیاق احمد نے اعلیٰ حکام سے درخواست کی ہے کہ کیس کی تفتیش محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) یا کرائم برانچ کے حوالے کی جائے۔

انتظار کے والد نے دعویٰ کیا ہے کہ تفتیشی ٹیم واقعے میں ملوث اہلکاروں کو بچانے کی کوشش کررہی ہے، سی سی ٹی وی وڈیو دکھائی گئی ہے، واقعہ ٹارگٹ کلنگ ہے۔

اشتیاق احمد نے دعویٰ کیا کہ ان بیٹے کے قتل میں اے سی ایل سی کے اعلیٰ افسران ملوث ہیں جبکہ ذرائع کا کہنا ہے کہ مقتول کے والد نے اپنے تحفظات تحریری طورپرآئی جی سندھ کو دیے ہیں۔

مقتول کے والد نے کیس کی موجودہ تفتیشی ٹیم پرعدم اعتماد کا اظہار کیا ہے۔