وزیراعلیٰ پنجاب نے اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کا افتتاح کر دیا

اورنج لائن میٹرو ٹرین فائل فوٹو اورنج لائن میٹرو ٹرین

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کا افتتاح کر دیا۔

اورنج لائن میٹرو ٹرین کی افتتاحی تقریب میں چیئرمین سی پیک اتھارٹی لیفٹینٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ اور چینی سفیر بھی شریک ہوئے۔

حکومت پنجاب کی جانب سے اورنج لائن میٹرو ٹرین کا یکطرفہ کرایہ 40 روپے رکھا گیا ہے۔

افتتاحی تقریب کے بعد 26 اکتوبر سے شہری اورنج ٹرین میں سفر کر سکیں گے، ٹرین صبح ساڑھے 7 سے رات ساڑھے 8 بجے تک چلائی جائے گی۔

27.1 کلومیٹر طویل ٹریک کے لیے 26 اسٹیشنز بنائے گئے ہیں

چین سے آئے ہوئے ماہرین نے پاکستانی ڈرائیورز کو ٹرین چلانے کی تربیت دی جب کہ ٹرین کی صفائی کا کام لاہور ویسٹ منیجمنٹ کمپنی کو سونپا گیا ہے۔

بجلی سے چلنے والی ٹرین کو 8 گرڈ اسٹیشن بجلی مہیا کریں گے اور ابتدائی طور پر ٹرین کو 12 گھنٹے کے لیے چلایا جا رہا ہے۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ مستقبل میں ٹرین کا آپریشن ٹائم 16 گھنٹے تک بڑھانے کا منصوبہ ہے۔

اورنج ٹرین کا ٹریک 27.1 کلومیٹر طویل اور 26 اسٹیشنز پر مشتمل ہے، ٹرین کے تمام راستوں پر اور ٹرین کے اندر کیمرے نصب ہیں۔

1.6 ارب ڈالر کا منصوبہ 1.45 ڈالر میں مکمل کیا: صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ

ٹرین منصوبہ پانچ سال کے عرصے میں مکمل ہوا ہے اور منصوبے پر 1.45 ارب ڈالر میں لاگت آئی ہے۔

وزیر ٹرانسپورٹ پنجاب جہانزیب کھچی کا کہنا ہے کہ لاہور کا اورنج لائن ٹرین مںصوبہ 1.6 ارب ڈالر کا تھا لیکن ہم نے اسے 1.45ارب ڈالر میں مکمل کر کے 1.5 ملین ڈالر کی بچت کی ہے۔

جہانزیب کھچی کا کہنا تھا کہ ٹرین منصوبے پر حکومت 5 ارب روپے کی سبسڈی دےگی۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store