چوہدری پرویز الٰہی نے اسلام آباد میں مندر کی تعمیر کو توہین ریاستِ مدینہ قرار دے دیا

چوہدری پرویز الٰہی فائل فوٹو چوہدری پرویز الٰہی

ق لیگ کے مرکزی رہنماء اور اسپیکر پنجاب امسبلی چوہدری پرویز الٰہی کا کہنا ہے کہ پاکستان اسلام کے نام پر وجود میں آیا تھا، دارالحکومت اسلام آباد میں نیا مندر بنانا نہ صرف اسلام کی روح کے خلاف ہے بلکہ یہ ریاست مدینہ کی بھی توہین ہے۔

تفصیلات کے مطابق اپنے ویڈیو بیان میں چوہدری پرویز الٰہی کا کہنا تھا کہ فتح مکہ کے موقع پر خاتم النبیین حضرت سیدنا محمد رسول اللہ ﷺ نے حضرت سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ کے ساتھ بیت اللہ شریف میں موجود 360 بتوں کو توڑا تھا اور ساتھ ہی یہ بھی فرمایا تھا کہ حق آیا اور باطل مٹ گیا، بیشک باطل مٹنے ہی والا تھا۔

اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ پاکستان جو اسلام کے نام پر وجود میں آیا تھا۔ اس کے دارالحکومت اسلام آباد میں نیا مندر بنانا نہ صرف اسلام کی روح کے خلاف ہے بلکہ یہ ریاست مدینہ کی بھی توہین ہے۔

چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ ہم اقلیتوں کے حقوق کے ساتھ ہیں۔ پہلے سے موجود مندروں کی مرمت کی جائے۔ میں نے اپنے دور میں کٹاس راج مندر کی مرمت کروائی تھی۔

اپنے دور میں پہلی دفعہ پاکستان میں بجٹ میں چرچز کی مرمت کیلئے پیسے رکھے تھے۔

خیال رہے کہ پاکستان میں یہ تنازعہ اس وقت سامنے آیا، جب حکومت کی جانب سے اسلام آباد میں مندر کی تعمیر کے لیے فنڈز جاری کیے گئے۔

ملک کی مذہبی جماعتوں کی جانب سے بھی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا، تاہم اب حکومت کی اتحادی جماعت بھی اس فیصلے سے ناخوش دکھائی دے رہی ہے۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store