امریکی کانگریس حرکت میں آگئی، بھارتی سفیر کو مقبوضہ کشمیرکی موجودہ صورتحال سے متعلق خط لکھ دیا

امریکی کانگریس فائل فوٹو امریکی کانگریس

امریکی ارکان کانگریس نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیرکی موجودہ صورتحال سے آگاہ کیا جائے، مقبوضہ کشمیر میں فون اور انٹرنیٹ سروس کب بحال ہوگی؟5اگست سے اب تک کتنے کشمیریوں کو گرفتارکیاگیا۔

امریکی اراکین کانگریس نے بھارتی سفیرہریش وردھان کو خط تحریر کیا ہے، خط امریکی اراکین کانگریس اینڈی لیون، جیمزمک گورن، سوزین وائلڈ، ڈیوڈسیسی لائن،دیناٹائی ٹس، کریسی ہولاہان کی جانب سے تحریرکیا گیا ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ مقبوضہ کشمیرکی موجودہ صورتحال سے آگاہ کیا جائے، مقبوضہ کشمیرمیں فون اور انٹرنیٹ سروس کب بحال ہوگی؟ 5اگست سے اب تک کتنے کشمیریوں کو گرفتارکیاگیا۔ خط میں کہا گیا ہے کہ گرفتار کشمیری بچوں کی تعداد سے متعلق آگاہ کیا جائے، پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتارافراد کو کس قانون کے تحت عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

خط میں کہا گیا ہے کہ کیا مقبوضہ کشمیر میں مواصلاتی نظام مکمل طور پر بحال ہوگیا؟ بتایا جائے کہ مقبوضہ کشمیرمیں موبائل فون سروس مکمل طور پر کب بحال ہوگی؟ مقبوضہ کشمیرمیں انٹرنیٹ سروس کب بحال ہوگی؟ خط میں کہا گیا ہے کہ امریکی ارکان کانگریس نے کہا کہ پرامن مظاہرین کے حقوق کیلئے بھارت کیا اقدامات کررہاہے؟ مقبوضہ وادی میں مظاہرین کو منتشرکرنے کیلئے ربڑ کی گولیاں استعمال کرنے کی اطلاعات ہیں، ایسے واقعات بھی ہوئے جن میں مظاہرین ربڑ کی گولیوں سے بینائی کھو بیٹھے، کیا اب بھی مقبوضہ وادی میں مظاہرین کو کنٹرول کرنے کیلئے ربڑ کی گولیاں استعمال کی جارہی ہیں؟ کیا بھارتی حکام بچوں سمیت نابینا ہونے والے کشمیریوں کی تعداد بتاسکتے ہیں؟

خط میں مزید کہا گیا ہے کہ کرفیو کی پابندی اور نرمی کے بارے میں آگاہ کیا جائے، ارکان کانگریس نے سوال کیا ہے کہ صحافیوں کو مقبوضہ کشمیر جانے کی اجازت کیوں نہیں دی جارہی؟، کیا بھارتی حکومت امریکی ارکان کانگریس کو وادی جانے کی اجازت دےگی؟، مقبوضہ کشمیرمیں شہریوں کی آزادانہ نقل وحرکت کیلئے حکومت کی کیا حکمت عملی ہے؟ خط میں کہا گیا ہے کہ حقائق تب سامنے آئیں گے جب غیرملکی صحافیوں اورامریکی اراکین کوآزادانہ نقل وحرکت کی اجازت ہوگی،توقع ہے کہ مقبوضہ وادی میں غیرملکی صحافیوں اور آزاد نمائندوں کوجانے کی اجازت ہوگی،کیابھارتی حکام مقبوضہ وادی میں جانے والے غیرملکی صحافیوں اورامریکی اراکین کاخیرمقدم کریں گے؟۔

 

install suchtv android app on google app store