بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر کا خاندان، کشمیرمیں بنا شیر، ماں بیٹی پرانسانیت سوز تشدد مگر کیوں؟ شرمندگی کی مثال قائم کر دی

بھارتیہ جنتا پارٹی فائل فوٹو بھارتیہ جنتا پارٹی

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رہنما کے بیٹے نے بد ترین مثال قائم  کر دی۔

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رہنما چودھری چگار سنگھ کے بیٹے نوین چودھری نے مقبوضہ رہاست جموں و کشمیر کے ضلع کٹھوعہ میں خاتون کو بیٹی سمیت شدید تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

رپورٹ کے مطابق نوین چودھری نے خاتون اور ان کی بیٹی کو دکان سے گھسیٹ کر باہر نکالا اور لوہے کی راڈ سے تشدد کیا جس سے دونوں خواتین شدید زخمی ہوگئیں۔
دوسری جانب حریت اور مزاحمتی قیادت کی جانب سے کشمیر کی گلیوں میں پوسٹرز آویزاں کردیے گئے ہیں جن پر تحریر ہے کہ کشمیری کبھی اجازات نہیں دیں گے کہ ان کے سامنے جنت نظیر وادی کو پامال کیا جائے۔

آج جنت نظیر وادی میں کرفیو کا 79واں روز ہے، غم اور صدمے سے نڈھال کشمیری عوام کی زندگیوں میں سکون ناپید ہو چکا ہے اور طویل پابندیوں کے باعث کاروباری مراکز کو تالے لگ چکے ہیں۔

عوام پر ڈھائے جانے والے مظالم کی انتہا یہی نہیں ہے بلکہ مودی سرکار کشمیر میں سیاسی قیدیوں کو رہا کرنے کے لیے ایک بانڈ پر دستخط بھی کرا رہی ہے، بانڈ کے تحت رہائی پانے والے قیدی آرٹیکل تین سو ستر سمیت کشمیر کے حالیہ حالات پر کوئی تبصرہ نہیں کریں ‌گے۔

امریکی کانگریس کی ذیلی کمیٹی آج کشمیر میں انسانی حقوق کی صورتحال کاجائزہ لے گی، کشمیر میں سیاسی رہنماؤں کی گرفتاریوں، نظام زندگی اور مواصلاتی رابطوں کی بندشوں پر بات ہوگی، امریکی معاون نائب وزیر خارجہ ایلس ویلز بھی انسانی حقوق کی صورتحال پر دلائل دیں گی۔

انسانی حقوق کی صورتحال جاننے کیلئے امریکی محکمہ خارجہ کے حکام کو بھی بلایا گیا ہے۔

install suchtv android app on google app store