جج ویڈیو کیس: ملزم ناصر بٹ نے جوابی بیان حلفی اسلام آباد ہائیکورٹ میں جمع کرادیا، بیان نے مسلم لیگ نواز میں ہلچل مچا دی

سابق وزیر اعظم نواز شریف فائل فوٹو سابق وزیر اعظم نواز شریف

جج ویڈیو کیس میں جج ارشد ملک کے بیان حلفی کے جواب میں ناصر بٹ نے جوابی بیان حلفی جمع کرا دیا، جج ویڈیو کیس کے مرکزی کردار ناصربٹ نے بیان حلفی اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرادیا۔

بیان حلفی میں کہا گیا ہے کہ جج ارشد ملک نے نواز شریف سے معافی مانگنے کےلئے ملاقات کی خواہش ظاہر کی،جج ارشد ملک کے اصرار پر نواز شریف ان سے ملاقات پر آمادہ ہوئے۔

ناصر بٹ نے جوابی بیان میں کہا ہے کہ جج ارشد ملک کے بیان حلفی میں مجھ پرلگائے گئے الزامات من گھڑت اور بے بنیاد ہیں، کسی بھی مرحلے پرجج ارشد ملک کو دھمکانے، بلیک میل یا خوفزدہ کرنے کی کوشش نہیں کی، ناصر بٹ نے کہا کہ جج ارشد ملک کو دھمکیاں مل رہی تھیں تو مانیٹرنگ جج یا سیکیورٹی عملے کو آگاہ کیوں نہ کیا؟ ۔

بیان حلفی میں کہا گیا ہے کہ جج ارشد ملک نے طاقتور گروپوں اور انکے کام میں مداخلت کی شکایت کی، جج ارشد ملک نے نواز شریف سے معافی مانگنے کے لیے ملاقات کی خواہش ظاہر کی،جج ارشد ملک کے اصرار پر نواز شریف ان سے ملاقات پر آمادہ ہوئے۔

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store