آن لائن کلاسز کیخلاف احتجاج، وزیر اعلیٰ بلوچستان نے گرفتار ہونے والے طلبہ کی فوری رہائی کا حکم دیدیا

 وزیر اعلیٰ بلوچستان نے احتجاج کے دوران گرفتار ہونے والے طلبہ کی فوری رہائی کا حکم دیدیا ہے فائل فوٹو وزیر اعلیٰ بلوچستان نے احتجاج کے دوران گرفتار ہونے والے طلبہ کی فوری رہائی کا حکم دیدیا ہے

 وزیر اعلیٰ بلوچستان نے احتجاج کے دوران گرفتار ہونے والے طلبہ کی فوری رہائی کا حکم جاری کرتے ہوئے ایس پی سٹی کو عہدے سے ہٹادیا۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال کا کہنا تھا کہ احتجاج کرنے والے طلبہ کی گرفتاری کا حکم میں نے نہیں دیا۔ انہوں نے بتایا کہ پولیس اور طلبہ میں جھگڑا ہوا جس کے بعد گرفتاریاں کی گئیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ میں نے پولیس کو ہدایت کی ہے کہ گرفتار ہونے والے طلبہ کو فوری طور پر رہا کیا جائے۔ جام کمال کا کہنا تھا کہ طلبہ کو گرفتار کرنے پر ایس پی سٹی کو فوری طور عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے۔

انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ طالبات سے بدسلوکی کرنے والی لیڈی کانسٹیبل کے خلاف بھی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

یاد رہے کہ آج بلوچستان کے دارالحکومت میں طلبہ نے آن لائن کلاسز کے خلاف احتجاج کیا، جس پر پولیس نے مظاہرین کے خلاف ایکشن لیا اور درجنوں طلبہ و طالبات کو حراست میں لیا۔پولیس حکام کے مطابق صوبے بھر میں کرونا کی روک تھام کے لیے حکومت نے عوامی اجتماعات پر پابندی عائد اور دفعہ 144 نافذ کی ہوئی ہے، مظاہرین کو دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر گرفتار کیا گیا۔

 

subscribe YT Channel install suchtv android app on google app store